گمنام آنکھیں۔

گمنام آنکھیں۔

ہاں میں نے ہزار آنکھیں دیکھیں 
سمندر کی طرح گہری، بہت گہری 
دلکش،دلربا ،بہت دل دار آنکھیں 
ساحل کے ساتھ ساتھ، ہم کنار آنکھیں 
ہاں نہیں دیکھیں ،مگر بہت شناسا سی 
دریائے نیل کے دامن میں دوڑتے ہوئے 
پل بھر میں، ٹھرے چاند سی
بے باک ، مہربان،خوش نما آنکھیں 
ہاں بہت خوب، شوخ رنگ لئے 
مگر پیاسی ،درد بھری خاموش آنکھیں
جیسے کچھ کہنا چاہتی ہیں ؛
ہاں مگر کہ نہیں پاتیں؛
کئی رنگ چھپائے بدن میں ،
ہزار رنگ لئے خوشنما ،دھنک سی آنکھیں
کوئی راز گہرا لئے اتراتی ہوئی ،
سرگوشیاں لئے بے آواز سی بلبل آنکھیں 
فلک کی نیلگی میں، رقص کرتے پرندوں سی،
وہ مدہوشی میں پنہاں معصوم آنکھیں 
درد کی چاہت میں ،ڈوبی محبت سی ،
بین کرتی ہوئی ،وہ لبریز آنکھیں 
بے نشاں منزل کے ؛اٹو ٹ ستارے سی،
بہت دلگیر ماتم کرتی ہوئی آنکھیں 
کسی کی یاد میں بے قرار  آنکھیں 
کسی کے انتظار میں منتظر آنکھیں
کسی کے غم میں نڈھال آنکھیں 
اداسی بھری آواز لئے ،  پرساز آنکھیں
ندامت سے بھری نادم آنکھیں 
میں نے دیکھی بے باک آنکھیں 
میں نے دیکھی پاکیزہ آنکھیں 
دھڑ کن سی ،
سانس سی ،
بے کل آنکھیں ،
پرنور آنکھیں  ،
نور ہی نور آنکھیں ،
روح کی چاہت آنکھیں ،
صبح سی کھلی آنکھیں ،
شام سی بند آنکھیں ،
آنکھیں “دل کا عکس” 
تمہاری آنکھیں؛
میری آنکھیں ؛
گمنام آنکھیں،
ہماری آنکھیں 
ایس ایس نور!
سدرہ اصغر
۔۔۔❤۔۔۔ 

Gumnam Ankhain
…–
Another creative and beautifully written Urdu poem by Sidra Noor

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Next Post

Be Your Mind's Master and Not the Slave 

Mon Jun 29 , 2020
Be Your Mind’s Master and Not the Slave  by Shahid Saleem Butt The people who go after their set routines […]

Urdu Zindgy.com Site

Zindgy.com urdu

Write for Zindgy

Write for Zindgy Write for Zindgy or Blog (English or Urdu) Send your write-up file at websfocus@gmail.com Terms and Conditions

Number #1 Baby Names Database in the World

%d bloggers like this: